سمجھوتہ ہے تو اشکِ ندامت سے رقم ہو

سمجھوتہ ہے تو اشکِ ندامت سے رقم ہو

اعلانِ بغاوت ہے تو پھر خوں سے لکھا جائے